پتھر کے گھر میں 100 سال بے غیر شادی کے گزارنے والا سعودی شخص 28

پتھر کے گھر میں 100 سال بے غیر شادی کے گزارنے والا سعودی شخص

پتھر کے گھر میں 100 سال بے غیر شادی کے گزارنے والا سعودی شخص

سعودی عرب کے حروب کمشنری میں پتھروں سے بنے پرانے طرز کے گھر میں رہنے والے 100 سالہ سعودی شہری جابر المجلی کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہے۔

المسرد ویب سائٹ کے مطابق جابر المجھلی نے ابھی تک شادی نہیں کی۔ اس کا کوئی خاندان نہیں ہے۔ وہ ہاروب کمشنریٹ کے نام پہاڑ میں پرانے طرز کے پتھر سے بنے مکان میں اکیلا رہتا ہے۔

وائرل ویڈیو میں جابر المجھلی کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ وہ مملکت کے بانی شاہ عبدالعزیز کے زمانے سے پتھر کے پرانے گھر میں رہ رہے ہیں۔ شاہ سعود، شاہ فیصل، شاہ خالد، شاہ فہد، شاہ عبداللہ اور اب شاہ سلمان کے دور میں بھی ان کا ٹھکانہ پتھروں کا پرانا گھر ہے۔

انہوں نے کہا کہ 86 سال قبل جازان کے پہاڑی علاقوں میں آنے والے زلزلے کی یاد آج بھی ذہنوں میں محفوظ ہے۔ اس وقت ان کی عمر 15 سال تھی۔

یہ بھی پڑھیں: بجلی کا بل چیک کرنے کا طریقہ

جابر المجلی کے مطابق وہ عشاء کے بعد سو جاتے ہیں اور فجر کے وقت بیدار ہوتے ہیں۔ وہ اپنی ضرورت کا سامان ایک کارکن کے ذریعے بازار سے منگواتے ہیں۔

شادی کے حوالے سے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ ‘100 سال سے زائد عمر کو پہنچنے کے بعد بھی ان کا شادی کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔’

اپنا تبصرہ بھیجیں