آج ڈالر کی قیمت پاکستان 80

آج ڈالر کی قیمت پاکستان

آج ڈالر کی قیمت پاکستان

آج پاکستان میں ڈالر کی قیمت 330 روپے ہے جو پاکستانی کرنسی ایکسچینج مارکیٹ میں 03 ستمبر 2023 کو اپ ڈیٹ ہوئی ہے اور انٹربینک میں ڈالر کی شرح 304.97 روپے ہے پاکستان میں فاریکس کی خرید و فروخت معیشت میں شامل مختلف عوامل کی وجہ سے روزانہ کی بنیاد پر اتار چڑھاؤ آتی ہے۔  یو ایس ڈالر کی بینک ایکسچینج کی قیمت ہمیشہ کرنسی ایکسچینج یا اوپن مارکیٹ میں زر مبادلہ کی شرح میں تھوڑی کم ہوتی ہے۔

کرنسی مارکیٹ
کرنسی قیمتِ خرید قیمتِ فروخت
چینی یوآن 41.96 42.06
امریکن ڈالر 304.97 305.47
یورو 330.92 331.52
برطانوی پاؤنڈ 386.77 387.42
آسٹریلیا ڈالر 197.59 197.91
کینیڈا ڈالر 225.72 226.22
سعودی ریال 81.29 81.44
اماراتی درہم 83.01 83.16
کویتی دینار 990.36 991.99

آج پاکستان میں ڈالر کا ریٹ

آج 03 ستمبر 2023 پاکستان میں ڈالر کی شرح انٹربینک ایکسچینج ریٹ میں 305.47 ہے جو کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے دیا ہے۔  اوپن مارکیٹ میں ڈالر کا ریٹ 330 ہے۔ حال ہی میں، انٹربینک ریٹ میں 00.7 پیسے کی کمی ہوئی۔  گزشتہ 30 دنوں میں، ڈالر  روپے کے بدلے میں 10.906 روپے مہنگا ہوا ہے۔؟

سوال: آج پاکستان میں ڈالر کا ریٹ کتنا ہے؟

آج پاکستان میں ڈالر کا ریٹ 305.47 روپے ہے۔

پاکستان میں $1 کی شرح کیا ہے؟

پاکستان میں $1 کی شرح اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے ذریعہ ایک سرکاری شرح کے طور پر انٹربینک ایکسچینج ریٹ میں 305.47 ہے۔؟؟سوال۔ پاکستان میں آج اوپن مارکیٹ میں ڈالر کا ریٹ کیا ہے؟

پاکستان میں آج اوپن مارکیٹ میں ڈالر کا ریٹ 333 ہے، یہ مختلف ہو سکتا ہے اور انٹربینک ریٹ سے مختلف ہے۔

آج ڈالر کی خریداری کی شرح کیا ہے؟

آج ڈالر کی قیمت خرید 304.47 ہے۔  یہ کرنسی ایکسچینج یا مالیاتی ادارے کے لحاظ سے بھی مختلف ہو سکتا ہے۔

ایک ڈالر کتنا روپے کا ہے؟

آج تک، اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی طرف سے فراہم کردہ انٹربینک ایکسچینج ریٹ میں لسٹ میں ایک ڈالر  305.47 روپے کے برابر ہے۔

فاریکس ریٹ ٹوڈے کے بارے میں معلومات خاص طور پر تاجروں اور سرمایہ کاروں کے لیے نسبتاً بہت اہم ہے لیکن اس کا تعین کرنا انتہائی اہم اور مشکل ہے۔  تاہم، یہ صفحہ آپ کو اوپن مارکیٹ ڈالر کی قیمت، آج پاکستان میں ڈالر کی قیمت اور دیگر کرنسیوں کے نرخ، مختلف عالمی کرنسیوں میں کرنسی کی شرح تبادلہ اور بہت کچھ فراہم کرے گا۔

ای سی پی اے ڈالر پر کیپ ہٹاتا ہے؟

اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے اپنی شرح مبادلہ کی پالیسیوں کو مستقل بنیادوں پر ایڈجسٹ کیا ہے جس سے روپے کی قدر متاثر ہو سکتی ہے۔

ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن آف پاکستان (ای سی اے پی) نے ڈالر کی قیمت کی حد کو ہٹا دیا ہے، جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ ڈالر تا روپے قدر اب طلب اور رسد سے طے کی جائے گی۔  ایکسچینج کمپنی کے ترجمان کے مطابق، حکومت نے ڈالر کو آزادانہ طور پر تیرنے کی اجازت دینے پر بھی اتفاق کیا ہے، جس سے زیادہ لچکدار اور مارکیٹ سے چلنے والی شرح مبادلہ کی اجازت دی جا سکتی ہے۔

پاکستان میں اوپن مارکیٹ ریٹ؟

پاکستان میں اوپن مارکیٹ ڈالر کی قیمت عام طور پر تجارت کے آزادانہ بہاؤ سے وابستہ ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ ممالک کے درمیان سامان کی خرید و فروخت میں کوئی رکاوٹ یا پابندی نہیں ہے اور ممالک کو اپنی مصنوعات کی طلب اور فراہمی کے مساوی مواقع حاصل ہوں گے۔  دوسری طرف اوپن مارکیٹ میں کوئی ٹیکس یا ٹیرف نہیں ہے۔  تاہم، تجارت پر جو سود پڑے گا اس کا تعین حکومت، فیڈرل ریزرو کرے گا۔  پاکستان میں آج ڈالر کی قیمت کو ناقابل یقین حد تک شدید مندی کا سامنا ہے کیونکہ ہوشربا مہنگائی نے ملک کو متاثر کیا ہے۔

کرنسیوں کی تبدیلی؟

اسی طرح اشیا کی رقم کے تبادلے کی تجارت بھی نسبتاً اہم ہے کیونکہ دوسرے ملک کے ساتھ مصنوعات کی خرید و فروخت کے لیے دوسرے ممالک کے ساتھ اوپن مارکیٹ ریٹ کو تبدیل کرنا ضروری ہے۔  پاکستان میں ڈالر سے روپے کی شرح جیسی کرنسیوں کے تبادلے کو بھی زرمبادلہ کی شرح کہا جاتا ہے۔  پاکستان میں ڈالر کی شرح کو دو ناموں سے پہچانا جاتا ہے، خرید و فروخت کی شرح۔

یہ بھی پڑھیں: ڈالر کی تاریخ

اس کے علاوہ، بین الاقوامی بینکوں کے پاس عالمی منڈی میں کرنسی کی تبدیلی کی شرح کو طے کرنے کی واحد ملکیت ہے جبکہ مرکزی بینک قومی کرنسی کو ریگولیٹ کرے گا اور فارن ایکسچینج فکسنگ کی نگرانی کرکے اشیا کی خرید و فروخت کے درمیان توازن برقرار رکھے گا۔  پاکستان میں اسٹیٹ بینک آف پاکستان مرکزی بینک ہے اور روزانہ کی بنیاد پر یہ غیر ملکی شرح مقرر کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں