پاک بحریہ کی پانچ روزہ مشقوں میں سعودی اسپیشل فورسز کی ٹیم نے حصہ لیا 65

پاک بحریہ کی پانچ روزہ مشقوں میں سعودی اسپیشل فورسز کی ٹیم نے حصہ لیا

پاک بحریہ کی پانچ روزہ مشقوں میں سعودی اسپیشل فورسز کی ٹیم نے حصہ لیا

پاک بحریہ کی پانچ روزہ مشقوں میں سعودی اسپیشل فورسز کی ٹیم نے حصہ لیا

سعودی عرب کی خصوصی افواج کی ایک ٹیم رواں ہفتے بحیرہ عرب میں ہونے والی کثیر القومی فوجی مشقوں میں حصہ لے گی۔ پاک بحریہ کے ایک افسر کے مطابق پاکستان کثیر القومی فوجی مشق امن 23 کی قیادت کر رہا ہے اور یہ پانچ روز تک جاری رہے گی۔

امن۔23 مشق کا آٹھواں ایڈیشن جمعہ کو شروع ہوگا جس میں بحری جہاز، ہوائی جہاز کے ساتھ سپیشل آپریشنز فورسز اور نیول EOD ٹیمیں حصہ لیں گی۔ پاکستانی بحری بیڑے کے کمانڈر اویس احمد بلگرامی نے صحافیوں سے گفتگو میں کہا ہے کہ ‘اس سال سعودی عرب کی اسپیشل آپریشنز فورسز کی ٹیم بھی مشقوں میں حصہ لے رہی ہے’۔

انہوں نے مزید کہا کہ مشقوں میں کویت اور عمان کی ٹیمیں بھی حصہ لیں گی۔ پاک بحریہ کے بیان کے مطابق ملٹی نیشنل نیول ایکسرسائز پیس کا انعقاد 2007 سے پاک بحریہ کے زیر انتظام کیا جا رہا ہے۔

مزید ممعلومات کے لیے لمحہ اردو وزٹ کرتے

یہ مشق ہر دو سال بعد کی جاتی ہے۔ بیان کے مطابق، “آٹھویں امن مشق 10 سے 14 فروری تک منعقد کی جا رہی ہے جس میں 50 سے زائد ممالک اپنے بحری اور فضائی جہازوں، سپیشل آپریشن فورسز/ میرینز ٹیموں اور مندوبین کے ساتھ حصہ لے رہے ہیں۔”

کمانڈر پاکستان فلیٹ نے اس بات پر زور دیا کہ مشق کا بنیادی مقصد تمام شریک ممالک کو ایک دوسرے کے بحری تصورات، مشترکہ آپریشنز اور سمندر میں چیلنجز سے نمٹنے کے طریقوں اور طریقوں کو سمجھنے میں مدد فراہم کرنا ہے۔

“یہ موقع سمندری ممالک کے درمیان امن، دوستی، بہتر سیکورٹی اور مشترکہ مفادات کے فروغ میں اہم کردار ادا کرے گا۔”

اپنا تبصرہ بھیجیں